تونسہ شریف۔ اے سی اور سابق ٹی ایم او کے درمیاں پھڈا، عنایت گاڈی کا گدڑ سنگھی؟

تونسہ شریف( سپیشل رپورٹر) سابق ٹی ایم او تونسہ عنایت اللہ گاڈی تین عہدوں کے آرڈر پرایڈمنسٹریٹر تونسہ میونسپل کمیٹی عبدلغفار خان سے دستخط کرانے پہنچ گئے ۔ ایڈمینسٹریٹر تونسہ میونسپل کمیٹی و اسسٹنت کمشنر تونسہ عبد الغفار کا جوائن کرنے سے صاف انکار، دو نوں میں ٹھن گئی، با وثوق ذرائع کے مطابق گزشتہ روز سابق ٹی ایم او نئے بلدیاتی نظام کے تحت بطور چیف آفیسر ، ٹی او ریگولیشن اور ٹی او فنانس کے اختیار ات کے احکامات کا تحریری لیٹر دستخط کرانے کے لئے گئے، ایڈمنسٹریٹر میونسپل کمیٹی تونسہ عبدلغفار خان نے آرڈر پر دستخظ کرنے سے یہ کہ کر انکار کر دیا کہ آپ جیسے نا اہل اور مبینہ بدعنوان آفیسر کی ضرورت نہیں اورانہوں نے سکریٹری لوکل گورنمنٹ پنجاب کو رپورٹ بھجوا دی ، اور انہیں کہا کہ پہلے اس بات کی تحقیق ہو گی کہ ساتویں گریڈ سے سترھیوں گریڈ تک ترقی کیسے ہوئی ۔ اور عرصہ 15 سال سے مسلسل تونسہ میں اہم عہدوں پر کیسے فائز رہے ۔ جس پر عنایت اللہ گاڈی برہم ہوئے اور کہا کہ وہ مسلم لیگ ن کے ایم این اے سردار امجد فاروق کھوسہ کے خاص اور باعتماد ہیں اور میرا بھائی چیرمین یونین کونسل بھی ہے اگر تمھارا تبادلہ نہ کرا سکا تو نام بدل دینا ۔ جس پر دونوں آفیسران کے درمیاں تلخ کلامی بھی ہوئی ۔ واضح رہے کہ عنایت گاڈی پر سابق ٹی ایم اے میں مالی بدعنوانیوں میں ملوث ہونے کے الزمات پر نیب اور انٹی کرپشن میں بھی تحقیقات جاری ہیں ۔ اور ان پر سرکاری پلاٹ اونے پونے داموں من پسند لوگوں کو نوازنے سمیت کروڑوں کی کرپشن کے الزمات بھی ہیں ۔ یاد رہے کہ عنایت گاڈی کے پاس ایک،، ایسی گڈر سنگھی،، بتائی جاتی ہے جس سے  وہ سابق ایم این اے اور وفاقی وزیر مملکت خزانہ خواجہ شیراز محمود ، سابق تحصیل ناظم خواجہ صلاح الدیں اکبر اور سابق تحصیل ناظم حاجی سعید اللہ نصوحہ مرحوم اور انکے سب کے بد ترین سیاسی مخالف موجودہ ایم این اے سردار امجد فاروق کھوسہ کے ہر دور میں خاص رہے ہیں اب امجد کھوسہ کو بھی انہوں نے مکمل کنٹرول کر لیا ہے ۔اسسٹنٹ کمشنر تونسہ عبدلغفار سے جب  استفسار کیا تو انہوں نے کہا کہ تنیوں اہم عہدوں پر ایک ایسے شخص کو کیسے تعینات کیا جاسکتا ہے جس پر کروڑوں روپے کے مالی بد عنوانی کے کیس چل رہے ہیں،

اپنا تبصرہ بھیجیں