تونسہ شریف۔ شہر میں دو لڑکیوں کی آپس میں شادی، ہنگامہ

تونسہ شریف۔ شہر میں دو لڑکیوں کی آپس میں شادی، ہنگامہ

تونسہ شریف۔ شہر میں دو لڑکیوں کی آپس میں شادی، ہنگامہ

jj

firg

یوں تو پاکستان میں آجکل سب کچھ ہی بہت عجیب و غریب ہو رہا ہے تاہم آج کی نوجوان نسل میں جو سب سے عجیب و غریب بات دیکھنے میں آرہی ہے وہ محبت کی شادی ہے ۔ آج کے نوجوان طبقے میں محبت کا معیار کیا ہے ؟ اس کا جواب شاید کوئی بھی نہی دے سکے گا۔ تازہ ترین میسر اطلاعات کے مطابق ملتان میں دو لڑکیوںکی شادی کا مقدمہ لایا گیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ہائیکورٹ ملتان بنچ نے ایم ایس نشتر ہسپتال کو جنس تبدیل ہونے کے بعد کلاس فیلو سے پسند کی شادی کرنے والے نوجوان کا 5 دسمبر کو طبی معائنہ کرانے کے لئے میڈیکل بورڈ تشکیل دینے کا حکم دیا ہے۔تونسہ شریف کی عائشہ سجاد نے درخواست دائر کی تھی کہ اس کی کلاس فیلو نازیہ احمد حسن کی جنس تبدیل ہونے کے بعد نام منیل احمد رکھ لیا اور دونوں نے اپنی پسند و مرضی سے شادی کر لی تو اس کے والدین نے غلط حقائق پر اس کے اغوا کا جھوٹا مقدمہ شوہر کے خلاف درج کرا دیا اس لئے مذکورہ مقدمہ خارج کرنے کا حکم دیا جائے۔ تاہم عائشہ خاتون کی ساس عدالت میں پیش ہوئیں اور بیان دیا کہ جنس کی تبدیلی کا بیان سراسر غلط ہے اور اس کی بیٹی ابھی نازیہ احمد حسن ہے اور اس کی جنس

تبدیل نہیں ہوئی۔واضح رہے کہ اس خبر کے منظر عام پر آتے ہی عوام کی جانب سے شدید رد عمل دیکھنے میں آرہا ہے ۔

pic-mnahilnn

اس سے قبل

تونسہ شریف ۔ جنسی تبدیل کے مراحل میں ، مردانہ صفات ظاہر ہونے پر لڑکی کو شادی کے نام پر ورغلا کر لے گیا، تھانہ تونسہ میں مقدمہ درج ، تفصیلات کے مطابق کوٹ سلطان کے رہائشی نازیہ عرف مناہل نونی جو کہ کچھ عرصہ سے تونسہ میں رہائش پذیر ہیں نے اپنے جسم میں مردانہ صفات ظاہر ہونے پر اپنے رشتہ دار لڑکی سجاد کی بیٹی عائشہ کو ورغلا کر لے گیا کہ وہ اب اس سے شادی کرے گا عائشہ کے والدہ کی رپورٹ پر تھانہ سٹی نے نازیہ جس نے اب اپنا نام مناہل نونی رکھ دیا ہے، کے خلاف عائشہ کو اغوا کرنے کے الزام میں مناہل نونی، فرزانہ، شبیر احمد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے، عائشہ کے لواحقین ماموں خادم او ر ہاشم دایہ اور لڑکی کی والدہ نجمہ نے بتایا کہ مناہل نونی ہے جنس تبدیلی کے مراحل میں ہے لڑکوں کے بھیس میں پھرتا ہے اور انہوں نے ایک گروہ بنایا ھے جو کہ لڑکیوں کو ورغلاتے ہیں اور بعد ازاں فروخت کرتے ہیں ، انہوں نے کہا کہ ان کی بچی عائشہ کو جو ایف ایس سی طالبہ کو مناہل نونی ورغلا کر لے گیا کہ وہ اس سے شادی کریگا ، انہوں نے کہا کہ نازیہ نے تعلیم لڑکیوں کے سکول میں حاصل کی اب کچھ عرصہ سے اس نے لڑکوں کے کپڑے پہن کر بال کٹو ا کر تونسہ میں رہائش پذیر ہوکر خود کو لڑکا ظاہر کر کے لڑکیوں کو پھنسانا شروع کر دیا ہے انہوں نے بتایا کہ نونی اب بھی لڑکی ہے ، اگر وہ جنس تبدیلی کا آپریشن بھی کروا لے تب بھی وہ شادی کے لائق نہیں رہتا، انہوں نے کہا نازیہ عرف مناہل نونی ان کا قریبی رشتہ دار ھے مناہل کے خطوط اور موبائل سے ان کی ایک ساتھ تصویرین ملی ہیں اور خطوط میں واضح طور پر لڑکی عائشہ کو بھاگنے اور گھر سے سامان چرانے کی ہدایت کی گئی ہے اورموبائل فون میں انکے ریکارڈنگ کالز میں ان کے لواحقین فرزانہ، شبیر نونی کو مشورے دے رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ انہیں شک ہے ان کی بیٹی کو کسی اور ہاتھوں فروخت نہ کیا جائے ، انہوں نے وزیر اعلی پنجاب سے بچی کی فوری برآمدگی کا مطالبہ کرتے ہوئے ملزمان کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں